بدھ 27 مئی 2020ء
بدھ 27 مئی 2020ء

اہم خبریں

طیارہ سانحہ کے بعد وزیراعظم چھٹیاں منانے نتھیاگلی چلے گئے، ن لیگ کے انتہائی دھماکہ خیز انکشافات

اسلام آباد (آن لائن) طیارہ سانحہ کے بعد وزیراعظم چھٹیاں منانے نتھیاگلی چلے گئے۔ ترجمان مسلم لیگ ن مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ شہزاد اکبر نے اصل مجرموں کو پچھلی گلی سے نتھیاگلی بھگا دیا ہے۔ انہوں نے وزیراعظم عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ طیارے کا حادثہ ہوا اور وزیراعظم عمران کان عید کی چھٹیاں منانے چلے گئے، لاپتہ وزیراعظم کے نامعلوم ترجمان صرف پریس کانفرنسز کیلئے ہیں،انہیں صرف سیاسی مخالفین پر تنقید کی پڑی رہتی ہے۔ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ وزیراعظم کے لاپتہ ہونے پر تشویش ہے، حکومت وزیراعظم کی گمشدگی کا googletag.pubads().definePassback('/1001388/JW_JavedCh', [1, 1]).display(); اشتہار شائع کرے۔ایک بیان میں انہوں نے کہاکہ ایک کروڑ نوکریاں اور پچاس لاکھ گھر دینے کا وعدہ کرنیوالا وزیراعظم لاپتہ ہے، آئی ایم ایف جانے کے بجائے خود کشی کرنے والا وزیراعظم لاپتہ ہے،بھیک مانگنے پر موت کو ترجیح دینے والا وزیراعظم لاپتہ ہے۔انہوں نے کہاکہ انڈے، کٹوں، مرغیوں اور بھینسوں سے ملکی معیشت ٹھیک کرنے والا وزیراعظم لا پتہ، ترقی کی شرح 2018 میں 5.8 % سے 2020 میں 1.5 فیصد پہ لانے والا وزیراعظم لا پتہ،دو سال میں تاریخی 13000 ارب کا قرض لینے والا وزیراعظم لا پتہ،وزیراعظم اور گورنر ہاؤس کو یونیورسٹی بنانے کا دعویٰ کرنے والا وزیراعظم لاپتہ،بطور وزیر اعظم سائیکل پر وزیراعظم ہاؤس جانے والا وزیراعظم لا پتہ،روپے کی قدر میں تاریخی کمی کرنے والا وزیر اعظم لا پتہ،وزیراعظم ملک کی گیس اور بجلی چوری کر کے لا پتہ، وزیراعظم مریضوں کی دوائی مہنگی کر کے لا پتہ، وزیراعظم حج مہنگا کر کے لا پتہ،وزیراعظم عوام کی507 ارب کی چینی چوری کرکے لا پتہ،وزیراعظم جان بچانے والی ادویات کے نام پر اربوں روپے کی دیگر ادویات بھارت سے درآمد ہونے کا فیصلہ کر کے لا پتہ،وزیراعظم کہاں ہیں جب طیارے کا حادثہ ہوا،طیارہ حادثے میں جاں بحق ہونے والوں کی میتیں نہ ملنے پر ان کے پیارے پوچھ رہے ہیں کہ وزیراعظم کہاں لاپتہ ہے۔

پاکستان

طیارہ سانحہ کے بعد وزیراعظم چھٹیاں منانے نتھیاگلی چلے گئے، ن لیگ کے انتہائی دھماکہ خیز انکشافات

اسلام آباد (آن لائن) طیارہ سانحہ کے بعد وزیراعظم چھٹیاں منانے نتھیاگلی چلے گئے۔ ترجمان مسلم لیگ ن مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ شہزاد اکبر نے اصل مجرموں کو پچھلی گلی سے نتھیاگلی بھگا دیا ہے۔ انہوں نے وزیراعظم عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ طیارے کا حادثہ ہوا اور وزیراعظم عمران کان عید کی چھٹیاں منانے چلے گئے، لاپتہ وزیراعظم کے نامعلوم ترجمان صرف پریس کانفرنسز کیلئے ہیں،انہیں صرف سیاسی مخالفین پر تنقید کی پڑی رہتی ہے۔ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ وزیراعظم کے لاپتہ ہونے پر تشویش ہے، حکومت وزیراعظم کی گمشدگی کا googletag.pubads().definePassback('/1001388/JW_JavedCh', [1, 1]).display(); اشتہار شائع کرے۔ایک بیان میں انہوں نے کہاکہ ایک کروڑ نوکریاں اور پچاس لاکھ گھر دینے کا وعدہ کرنیوالا وزیراعظم لاپتہ ہے، آئی ایم ایف جانے کے بجائے خود کشی کرنے والا وزیراعظم لاپتہ ہے،بھیک مانگنے پر موت کو ترجیح دینے والا وزیراعظم لاپتہ ہے۔انہوں نے کہاکہ انڈے، کٹوں، مرغیوں اور بھینسوں سے ملکی معیشت ٹھیک کرنے والا وزیراعظم لا پتہ، ترقی کی شرح 2018 میں 5.8 % سے 2020 میں 1.5 فیصد پہ لانے والا وزیراعظم لا پتہ،دو سال میں تاریخی 13000 ارب کا قرض لینے والا وزیراعظم لا پتہ،وزیراعظم اور گورنر ہاؤس کو یونیورسٹی بنانے کا دعویٰ کرنے والا وزیراعظم لاپتہ،بطور وزیر اعظم سائیکل پر وزیراعظم ہاؤس جانے والا وزیراعظم لا پتہ،روپے کی قدر میں تاریخی کمی کرنے والا وزیر اعظم لا پتہ،وزیراعظم ملک کی گیس اور بجلی چوری کر کے لا پتہ، وزیراعظم مریضوں کی دوائی مہنگی کر کے لا پتہ، وزیراعظم حج مہنگا کر کے لا پتہ،وزیراعظم عوام کی507 ارب کی چینی چوری کرکے لا پتہ،وزیراعظم جان بچانے والی ادویات کے نام پر اربوں روپے کی دیگر ادویات بھارت سے درآمد ہونے کا فیصلہ کر کے لا پتہ،وزیراعظم کہاں ہیں جب طیارے کا حادثہ ہوا،طیارہ حادثے میں جاں بحق ہونے والوں کی میتیں نہ ملنے پر ان کے پیارے پوچھ رہے ہیں کہ وزیراعظم کہاں لاپتہ ہے۔

انٹرنیشنل

سعودی عرب میں مساجد میں نماز ادا کرنے کی اجازت، نماز جمعہ بارے بھی اہم اعلان کر دیا گیا

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب نے چار جون سے کرفیو کے دوران فجر اور عشاء کی نماز مسجد میں ادا کرنے کی اجازت دے دی، سعودی وزارت داخلہ نے 31 مئی سے مساجد میں نماز جمعہ اور باجماعت نمازوں کی مشروط اجازت بھی دے دی ہے۔ سعودی وزارت داخلہ کے مطابق 31 مئی سے مکہ مکرمہ کے علاوہ سعودی عرب کے دیگر تمام علاقوں میں نافذ کرفیو میں نرمی کی جا رہی ہے۔ ہدایات کے مطابق ان علاقوں میں رات 8 بجے سے صبح 6 بجےتک کرفیو نافذ رہے گا اور لوگوں کو صبح 6 بجے سے رات 8 بجے googletag.pubads().definePassback('/1001388/JW_JavedCh', [1, 1]).display(); تک گھروں سے باہر نکلنے کی اجازت ہو گی اور وہ مساجد میں نماز کی ادائیگی بھی کر سکیں گے۔ فجر اور عشاء کی نماز کے وقت بھی کرفیو نافذ رہے گا لیکن لوگوں کو مساجد میں نماز پڑھنے کی اجازت ہو گی۔ سعودی مذہبی امور کے وزیر کا کہنا ہے کہ مکہ کی مساجد کے سوا ملک کی تمام مساجد میں نماز جمعہ اور با جماعت نمازوں کی مشروط اجازت دی گئی ہے۔

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں