پیر 26  اگست 2019ء
پیر 26  اگست 2019ء

انضمام الحق کے استعفے کے بعد کونسا سابق پاکستانی کھلاڑی قومی ٹیم کے نئے چیف سلیکٹر کے طور پر مضبوط ترین امیدوار بن گیا

لاہور( آن لائن ) انضام الحق کے استعفے کے بعد محسن حسن خان قومی ٹیم کے نئے چیف سلیکٹر کے مضبوط ترین امیدوار بن گئے، پاکستان کرکٹ بورڈ آئندہ 2 سے 3 ہفتوں میں نئے چیف سلیکٹر کے نام کا باقاعدہ اعلان کر دے گا، انضمام الحق 20 جولائی کو اپنا عہدہ چھوڑ دیں گے۔ تفصیلات کے مطابق ماضی میں پاکستانی ٹیم کیلئے ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹر کے فرائض نبھانے والےسابق ٹیسٹ کرکٹر محسن خان کی قومی کرکٹ سیٹ اپ میں واپسی کا قوی امکان ہے جو پاکستانی ٹیم کے چیف سلیکٹر یا منیجر کی اہم ترین ذمہ داری googletag.pubads().definePassback('/1001388/JW_JavedCh', [1, 1]).display(); سنبھال سکتے ہیں، انضمام الحق بیٹنگ کوچ کیلئے مضبو ط امیدوار ہیں۔واضح رہے کہ بعض سابق کرکٹرز کی جانب سے پی سی بی کو مشورہ دیا گیا ہے کہ ورلڈ کپ کے بعد ہونے والی ممکنہ تبدیلیوں کے دوران پرانے چہروں پر دوبارہ انحصار نہ کیا جائے تاہم گزشتہ دنوں کرکٹ کمیٹی سے مستعفی ہونے والے سابق اوپننگ بیٹسمین محسن خان ایک مرتبہ پھر کسی اہم کردار میں سامنے آنے کیلئے تیار ہیں اور ذرائع کا دعویٰ ہے کہ ان کو عالمی کپ کے بعد چیف سلیکٹر یا قومی کرکٹ ٹیم کے منیجر کا عہدہ سونپا جا سکتا ہے جس میں وہ خود بھی ذاتی طور پر کافی دلچسپی رکھتے ہیں۔واضح رہے کہ 64 سالہ محسن خان2010ء￿ اور2011 ء￿ میں بطور چیف سلیکٹر فرائض کی ادائیگی کے بعد قومی ٹیم کے عبوری ہیڈ کوچ مقرر کئے گئے تھے اور ان کی زیرنگرانی گرین شرٹس نے اس وقت عالمی رینکنگ میں سرفہرست ٹیم انگلینڈ کے علاوہ بنگلہ دیش اور سری لنکا کیخلاف سیریز میں بھی کامیابی حاصل کی تھی مگر اس حقیقت کے باوجود ذکاء￿ اشرف کے چیئرمین پی سی بی بننے کے بعد محسن خان کی جگہ ڈیو واٹمور کو پاکستانی ٹیم کا کوچ بنا دیا گیا تھا۔

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں