پیر 26  اگست 2019ء
پیر 26  اگست 2019ء

انضمام الحق کا دور پاکستان ٹیسٹ کرکٹ کیلئے تباہی کا پیغام لایا

لاہور (آن لائن) انضمام الحق کے دور میں پاکستان کی ٹیسٹ کرکٹ تباہی سے دوچار ہوئی، ٹیم نمبرون سے ساتویں پوزیشن پر پہنچ گئی۔انضمام الحق جب چیف سلیکٹر بنے توقومی ٹیسٹ ٹیم آئی سی سی رینکنگ میں نمبر ون تھی لیکن بعدازں پے درپے شکستوں کی وجہ سے ساتویں پوزیشن تک جا پہنچی،ان کے دور میں پاکستان نے 28ٹیسٹ میچز کھیلے، 10جیتے اور 17میں مات ہوئی، ایک مقابلہ ڈرا ہوا،ون ڈے میں گرین شرٹس نے 68میچز میں سے 32جیتے اور 34 میں ناکامی ہوئی، 2مقابلے بے نتیجہ رہے،ان میں سے بھی بیشتر فتوحات زمبابوے، سری لنکا اور افغانستان جیسی کمزور googletag.pubads().definePassback('/1001388/JW_JavedCh', [1, 1]).display(); ٹیموں کیخلاف تھیں۔اس دوران پاکستان نے چیمپئنز ٹرافی2017ءجیتی،ایشیاء کپ اور ورلڈکپ میں کارکردگی ناقص رہی،بھارت کے ہاتھوں 4میچز میں شکست ہوئی۔2016ء میں نویں پوزیشن کی حامل پاکستان ٹیم اس وقت عالمی رینکنگ میں چھٹے نمبر پر ہے، ٹی ٹونٹی رینکنگ میں پاکستان ٹیم نے 37میچز میں سے 30جیتے اور 7 میں ناکامی ہوئی۔انضمام الحق کے دور میں تیسری سے پہلی پوزیشن کا سفر طے ہوا،انضمام الحق کی بطور چیف سلیکٹر آخری ذمہ داری ورلڈ کپ کے لیے سلیکشن تھی، منتخب کردہ ٹیم سیمی فائنل تک نہ پہنچ سکی۔ پاکستان نے 5 میچز جیتے، 3میں شکست ہوئی اور ایک کا نتیجہ نہیں نکل سکا۔

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں