پیر 13 جولائی 2020ء
پیر 13 جولائی 2020ء

جوئے کمپنی سے معاہدہ،پی سی بی کے اعلیٰ عہدیداروں کیخلاف فوجداری کارروائی شروع کرنے کیلئے سپریم کورٹ میں مشترکہ درخواست دائر

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)پاکستان سپر لیگ کے براہ راست نشریاتی حقوق کا معاملہ ،پی سی بی بورڈ آف گورنرز کے سابق ممبر شکیل شیخ اور حال ہی میں بورڈ آف گورنرز سے ہٹائے گئے ممبر نعمان بٹ کی جانب سے آرٹیکل 184/3 کے تحت سپریم کورٹ میں مشترکہ آئینی درخواست دائر کردی گئی۔یہ درخواست معروف وکیل محمد اسد راجپوت کے توسط سے دائر کی گئی ہے اور 11 جواب دہندگان کو نوٹسز جاری کردیئے گئے ہیں۔ جن میں وزارت بین الصوبائی رابطہ ،پی سی بی ،چیئرمین احسان مانی ،،چیف ایگزیکٹو وسیم خان ،ڈائریکٹر انٹرنیشنل کرکٹ ذاکر خان ،ڈائریکٹر میڈیا سمیع الحسن برنی googletag.pubads().definePassback('/1001388/JW_JavedCh', [1, 1]).display(); ، ڈائریکٹر کمرشل بابر حامد ، ڈائریکٹر سیکیورٹی اینڈ اینٹی کرپشن آصف محمود،ممبر بورڈ آف گورنر اسد علی خان ،سابق چیف آپریٹنگ آفیسر سبحان احمد اور قائم مقام چیف فنانشل آفیسر عتیق رشید شامل ہیں۔ایک پریس ریلیز کے مطابق پی سی بی کا تین سالوں سے ٹیک فرنٹ کے ساتھ براہ راست نشریاتی حقوق کا معاہدہ قرآن و سنت اور آئین پاکستان کے آرٹیکل 2-A ،آرٹیکل 5 ،آرٹیکل 31 ،آرٹیکل 37-جی کے حکم کے خلاف تھا۔انہوں نے مزید کہا کہ عدالت کو آئین پاکستان کے تحفظ اور ان کے تحفظ کیلئے جواب دہندگان کو مناسب ہدایات جاری کرنا چاہئیں اور قوانین کی پاسداری کی جائے اور کرکٹ سے جوئے کی لعنت کو روکنے کے لئے فوری اقدامات اٹھائے جائیں۔انہوں نے معاہدے کو غیر قانونی قرار دینے کی بھی درخواست کی جبکہ مدعا علیہان نمبر 2 سے 11 کے خلاف سول اور فوجداری کارروائی کا آغاز بھی کیاجائے ۔انہوں نے عدالت سے یہ بھی درخواست کی کہ وہ جوابدہ نمبر 2 سے 9 اور 11 کو اپنے متعلقہ دفاتر سے معطل کریں اور پی سی بی کے یومیہ امور کے انتظام ، نظم و نسق اور مؤثر طریقے سے چلانے کے لئے ایک ادارہ، فورم یا کمیٹی تشکیل دیں۔

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں