پیر 26  اگست 2019ء
پیر 26  اگست 2019ء

موبائل فون کا استعمال بچوں کو کونسی خوفناک بیماری میں ڈال رہا ہے؟ ماہرین نے تہلکہ خیز انکشافات کر دیئے

خالق نگر(این این آئی)معروف معالج وہیڈآف ڈیپارٹمنٹ پیڈزجناح ہسپتال لاہورپروفیسرڈاکٹرعائشہ عارف کا کہنا ہے کہ موبائل فون کا زیادہ استعمال بچوں کی صحت کے لیے انتہائی خطرناک ہے جو کینسر کا باعث بن سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بڑوں کے مقابلے میں بچوں کے دماغمائیکروویو ریڈی ایشنز زیادہ جذب کرتے ہیں، موبائل فون کے زیادہ استعمال سے بچوں میں نیند کی کمی، برین ٹیومر اور نفسیاتی مسائل جنم لیتے ہیں۔ان خیالات کااظہار وہ گزشتہ روزایک ملاقات کے دوران کررہی تھیں اس موقع پر ڈاکٹرعدنان بھی موجودتھے،پروفیسرڈاکٹرعائشہ عارف کا مزیدکہنا ہے کہ موبائل فون کے زیادہ استعمال سے ہماری باڈی googletag.pubads().definePassback('/1001388/JW_JavedCh', [1, 1]).display(); پر مضر اثرات مرتب ہوتے ہیں خاص طور پر بچوں کی بڑھوتری کے دوران اس کا استعمال مستقبل میں برین کینسر کا باعث بن سکتا ہے۔انہوں نے موبائل فون کے استعمال کے حوالے سے احتیاطی تدابیر کے متعلق بتایا کہ اگرچہ وائرلیس فون اب ہماری روزمرہ زندگی کا لازمی جزو بن گئے ہیں مگر اس کا کم سے کم استعمال ہمارے لیے بہتر ہے۔انہوں نے بتایا کہ موبائل فون کا کان سے دور رکھ کر استعمال صحت کے لیے بہتر ہے جو خطرات کو 1ہزار فیصد کم کر دیتا ہے۔انہوں نے کہا کہ موبائل فون کو پائوچ،پرس،بیگ یا بیک پیک میں رکھنا چاہیے۔پروفیسرڈاکٹرعائشہ عارف نے کہا کہ ایسی ڈیوائسز کو حاملہ خواتین سے دور رکھنا چاہیے۔ نرسنگ کے شعبہ یا بچوں کو دودھ پلانے کے دوران خواتین کو موبائل فون کا استعمال نہیں کرنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ نوجوانوں کو موبائل فون کا بہتر استعمال کے متعلق سیکھنا چاہیے اور بچوں کو ان کے بیڈ رومز میں موبائل کے استعمال کی ہرگز اجازت نہیں دینی چاہیے۔‎‎

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں