جمعه 22 نومبر 2019ء
جمعه 22 نومبر 2019ء

ہماری تحریک سے عمران ہی نہیں اسرائیل بھی پریشان ہے، انڈیا دشمن، چین اور ایران ناراض، مولانافضل الرحمان نے سنگین الزامات عائد کردیئے

پشاور(آن لائن) جمیعت علمائے اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہاہے کہ ہماری جمہوریت آئین کے تابع ہونی چاہئے، حکومت کٹھ پتلی ہے، اس کے پیچھے اسٹیبلشمنٹ ہے، عوام کے حق کی جنگ لڑ رہے ہیں،تمام اپوزیشن جماعتیں ایک پیج پر ہیں۔پشاور میں کارکنوں سے خطاب میں جے یو آئی ف کے سربراہ نے کہا کہ ہماری تحریک سے عمران ہی نہیں اسرائیل بھی پریشان ہے۔مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ ہم پارلیمانی سیاست سے وابستہ ہیں، عوام کے ووٹ کی عزت کے لئے ہم نہیں کھڑے ہوں گے توکون کھڑا ہوگا؟ آج ملک میں جمہوریت نہیں ہے، googletag.pubads().definePassback('/1001388/JW_JavedCh', [1, 1]).display(); ووٹ پر ڈاکہ ڈالا جائے گا تو کیوں تحریک نہیں چلائیں گے؟انہوں نے کہا کہ 9 مہینوں میں 15 ملین مارچ کئے، کاروباری طبقہ پریشان ہے، فیکٹریاں بند ہورہی ہیں،عام آدمی گھر کا راشن خریدنے کے قابل نہیں رہا۔جمیعت علمائے اسلام کے س4ربراہ نے کہا کہ خارجہ پالیسی کا یہ حال ہوگیاہے کہ انڈیا دشمن، چین اور ایران ناراض، پڑوس میں بھی تنہا ہیں۔سابق وزیر اعلی خیبر پختونخوا اکرم خان درانی نے اپنے خطاب میں کہا کہ آج کا نوجوان جے یو آئی کے ساتھ ہے،تبدیلی کے دعویداروں نے نوجوانوں کو تبدیلی کے نام پر گمراہ کیا،وزیر اعظم نے امریکہ ملکی وقار کی دھجیاں اڑا دی ہیں۔جے یو آئی ف کے رہنما نے کہا کہ امریکہ میں بیٹھ کر قومی اداروں پر الزامات بھی ہمارے وزیر اعظم نے لگائے.مولانا فضل الرحمن نے سلیکٹڈ وزیر اعظم کو چیلنج کیا ہے،ہمیں نیب سے ڈرایا جاتا ہے ہم ڈرنے والے نہیں۔اکرم خان درانی نے کہا کہ حکومت والے قومی اداروں کو متنازعہ بنانا چاہتے ہیں،تمام سیاسی جماعتیں اس ملک کو آزاد ریاست نہیں سمجھتے،نظریات کی جنگ میں فاصلے کوئی معنی نہیں رکھتے ہر رکاوٹ توڑ کر اسلام آباد جائیں گے۔

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں