جمعه 18  ستمبر 2020ء
جمعه 18  ستمبر 2020ء

بھارت ڈر گیا 5 اگست کے پیش نظر مقبوضہ کشمیر میں کرفیو نافذ، نئی خاردار تاریں اور لوہے کی رکاوٹیں لگادی گئیں

نئی دہلی (این این آئی)بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کی خودمختار حیثیت ختم کرنے کے جابرانہ اقدام کو ایک برس مکمل ہونے پر احتجاجی مظاہروں کے ڈر سے ایک روز قبل ہی پوری وادی میں کرفیو نافذ کردیا گیا۔فرانسیسی میڈیا کے مطابق مقبوضہ کشمیر کے مرکزی شہر سری نگر کے لیے جاری حکومتی ہدایت نامے میں کہا گیا کہ یہ پابندیاں فوری طور پر نافذ ہوں گی اور 4 اور 5 اگست تک نافذ العمل رہیں گی۔اس ضمن میں ایک سینئر پولیس عہدیدار نے شناخت پوشیدہ رکھنے کی شرط پر بتایا کہ کشمیر کے تمام اضلاع میں مکمل طور googletag.cmd.push(function() { googletag.display('div-gpt-ad-1557484938290-0'); }); googletag.pubads().definePassback('/1001388/JW_JavedCh', [1, 1]).display(); پر کرفیو نافذ رہے گا۔مکمل کرفیو کا مطللب اس دوران صرف اور صرف خصوصی سرکاری پاس کے ذریعے نقل و حرکت ممکن ہے جو ضروری سروسز مثلاً پولیس اور طبی عملے کے لیے جاری کیے جاتے ہیں ، باقی کشمیری عوام گھروں میں محصور رہیں گے۔

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں