اتوار 05 اپریل 2020ء
اتوار 05 اپریل 2020ء

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس سے متاثرہ چین کے شہر ووہان سے رپورٹنگ کرنے والا صحافی چین کیوشی مبینہ طور پر گزشتہ ہفتے لاپتہ ہوگیا۔نشریاتی ادارے کی رپورٹ میں صحافی کے اہلخانہ اور دوستوں کا حوالہ دیتے ہوئے یہ خبر دی۔رپورٹ میں بتایا گیا کہ چین کیوشی 24 جنوری کو ووہان پہنچے جہاں سے انہوں نے اپنے دورے کے دوران بنائی گئی ویڈیوز انٹرنیٹ پر شیئر کیں،جس میں 'بھرے ہوئے ہسپتال، جنازہ گاہوں اور عارضی طور پر بنائے گئے آئی سولیشن (طبی قید)وارڈزشامل ہیں۔رپورٹ کے مطابق چین کیوشی کے دوست نے ٹوئٹر پر صحافی کی والدہ کا ویڈیو پیغام اپلوڈ کیا googletag.pubads().definePassback('/1001388/JW_JavedCh', [1, 1]).display(); جس میں انہوں نے کہا تھا کہ صحافی غائب ہوگئے ہیں۔چین کیوشی کے دوست بار بار ان سے خیریت معلوم کرتے رہتے تھے کیونکہ انہیں خوف تھا کہ صحافی کو کسی بھی وقت ان کی رپورٹنگ کی وجہ سے گرفتار کرلیا جائے گا اور جب انہوں نے جمعرات کی شام کو فون کا جواب نہیں دیا تو ان کی تشویش میں اضافہ ہوگیا تھا۔ان کے دوستوں کے مطابق چین کیوشی نے ان کے ٹوئٹر اکانٹ کی تفصیلات اپنے قریبی دوستوں کو انہیں حکام کی جانب سے گرفتار کیے جانے کے خدشے کے پیش نظر دے رکھی تھیں۔ادھرووہان اور کنگڈا شہر کی پولیس کا کہنا تھا کہ انہیں چین کیوشی کے حوالے سے کوئی معلومات نہیں ہیں۔ دریں اثنا انسانی حقوق کی تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل نے بھی صحافی کی گمشدگی پر تشویش کا اظہار کیا۔ٹوئٹر پر پیغام میں ایمنسٹی انٹرنیشنل کا کہنا تھا کہ صحافی جو ووہان سے رپورٹنگ کرتے تھے، لاپتہ ہیں، ان کے دوست کہتے ہیں کہ انہیں جبری طور پر قرنطینہ میں رکھا گیا ہے، چین قرنطینہ کو کورونا وائرس کی رپورٹنگ کو سینسر کرنے کے لیے سیاسی ہتھیار کے طور پر استعمال نہ کرے، اگر چین کیوشی قرنطینہ میں ہیں تو حکام ان کے بارے میں فوراً  تفصیلات سامنے لائے۔

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں