پیر 13 جولائی 2020ء
پیر 13 جولائی 2020ء

غریب ممالک کو 22 ارب ڈالر کا ریلیف دیا جا چکا،اب قرضے کی مد میں جلد ہی کتنے ارب ڈالر جاری کیے جائیں گے ؟ آئی ایم ایف نے تفصیلات جاری کر دیں 

نیویارک (این این آئی) عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کے باعث رواں سال کے دوران عالمی معیشت 3 فیصد سے زیادہ سکڑے گی۔مینجنگ ڈائریکٹر آئی ایم ایف نے عالمگیر وبا کورونا کی وجہ سے معیشت پر مرتب ہونے والے اثرات کا جائزہ لیتے ہوئے کہا کہ رواں سال کے دوران عالمی معیشت 3 فیصد سے زیادہ سکڑے گی مگر اگلے سال کےدوران عالمی معیشت میں کچھ بہتری آنے کی توقع ہے۔ایم ڈی آئی ایم ایف کے مطابق آئندہ مہینوں میں عالمی معیشت میں 9 ٹریلین ڈالرز لگانے کی ضرورت ہوگی کیونکہ کورونا کی googletag.pubads().definePassback('/1001388/JW_JavedCh', [1, 1]).display(); وجہ سے سرمایہ کاروں نیایمرجنگ مارکیٹ سے 100ارب ڈالر سے زیادہ نکال لیے ہیں۔انہوںنے کہاکہ اپریل اور مئی میں ایمرجنگ مارکیٹ نے 77 ارب ڈالر کا قرض لیا ہے لہذا مستقبل میں ایسے ممالک جن پر قرض زیادہ ہے ان کو مسائل کا سامنا کرنا پڑے گا۔ایم ڈی آئی ایم ایف کے مطابق ابھی تک غریب ممالک کو 22 ارب ڈالر کا ریلیف دیا جا چکا ہے اور جلد قرض کی مد میں مجموعی طور  پر 27 ارب ڈالر کا ریلیف دیا جائے گا۔

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں