جمعرات 19  ستمبر 2019ء
جمعرات 19  ستمبر 2019ء

اہم خبریں

خورشیدشاہ کی گرفتاری پر پیپلز پارٹی نے حکومت کے خلاف دھماکہ خیز اعلان کر دیا، ڈیڈ لائن دیدی گئی

اسلام آباد(آن لائن)چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے حکومت کے خلاف احتجاج تحریک چلانے کا اعلان کردیا۔گزشتہ روز چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ہم خورشید شاہ کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہیں۔ نیب کا کالا قانون سیاسی انجینئرنگ کے لیے بنایا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم نے حکومت اور ان کے سہولت کاروں کو ڈیڈ لائن دے دی ہے اور اب ہم ملک میں بڑھتی مہنگائی اور عوامی مسائل کو سامنے رکھ کر ملک بھر میں احتجاج کریں گے جن کی تفصیلات جلد جاری کر دی جائیں googletag.pubads().definePassback('/1001388/JW_JavedCh', [1, 1]).display(); گی۔انہوں نے کہا کہ نیب آمر کا بنایا ہوا کالا قانون ہے جس نے فریال تالپور کو بھی غیر آئینی طریقے سے گرفتار کیا۔ حزب اختلاف کے لوگوں کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ عمران خان کے کٹھ پتلی وزیر اعظم ہونے کی وجہ سے کشمیر کاز کو نقصان پہنچ رہا ہے۔ عمران خان کو ہمیں آپس میں لڑانے کے بجائے ہمیں ایک بن کر کشمیریوں کے لیے آواز اٹھانا چاہیے تھا۔انہوں نے کہا کہ جب کشمیر پر ایک اہم موقع آ رہا ہے تو نیب کو استعمال کرکے سیاسی بدلے لیے جارہے ہیں اور کشمیر پر ناکامی کی وجہ سے گرفتاریاں کر کے عوام کی توجہ ہٹائی جارہی ہے۔بلاول بھٹو نے کہا کہ یہ ایک نالائق اور نااہل حکومت ہے۔ یہ اگر اپنے ملک کی قیادت نہیں کرسکتے تو کشمیر پر کچھ بھی نہیں کرسکتے۔ اپنے ہی ملک میں انسانی حقوق کی دھجیاں اڑائی جا رہی ہیں۔

پاکستان

خورشیدشاہ کی گرفتاری پر پیپلز پارٹی نے حکومت کے خلاف دھماکہ خیز اعلان کر دیا، ڈیڈ لائن دیدی گئی

اسلام آباد(آن لائن)چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے حکومت کے خلاف احتجاج تحریک چلانے کا اعلان کردیا۔گزشتہ روز چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ہم خورشید شاہ کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہیں۔ نیب کا کالا قانون سیاسی انجینئرنگ کے لیے بنایا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم نے حکومت اور ان کے سہولت کاروں کو ڈیڈ لائن دے دی ہے اور اب ہم ملک میں بڑھتی مہنگائی اور عوامی مسائل کو سامنے رکھ کر ملک بھر میں احتجاج کریں گے جن کی تفصیلات جلد جاری کر دی جائیں googletag.pubads().definePassback('/1001388/JW_JavedCh', [1, 1]).display(); گی۔انہوں نے کہا کہ نیب آمر کا بنایا ہوا کالا قانون ہے جس نے فریال تالپور کو بھی غیر آئینی طریقے سے گرفتار کیا۔ حزب اختلاف کے لوگوں کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ عمران خان کے کٹھ پتلی وزیر اعظم ہونے کی وجہ سے کشمیر کاز کو نقصان پہنچ رہا ہے۔ عمران خان کو ہمیں آپس میں لڑانے کے بجائے ہمیں ایک بن کر کشمیریوں کے لیے آواز اٹھانا چاہیے تھا۔انہوں نے کہا کہ جب کشمیر پر ایک اہم موقع آ رہا ہے تو نیب کو استعمال کرکے سیاسی بدلے لیے جارہے ہیں اور کشمیر پر ناکامی کی وجہ سے گرفتاریاں کر کے عوام کی توجہ ہٹائی جارہی ہے۔بلاول بھٹو نے کہا کہ یہ ایک نالائق اور نااہل حکومت ہے۔ یہ اگر اپنے ملک کی قیادت نہیں کرسکتے تو کشمیر پر کچھ بھی نہیں کرسکتے۔ اپنے ہی ملک میں انسانی حقوق کی دھجیاں اڑائی جا رہی ہیں۔

انٹرنیشنل

تیل تنصیبات پر کس نے حملہ کیا؟ سعودی عرب نے شواہد پیش کر دیے، حملے میں 18 ڈرونز اور 7 کروز میزائل استعمال کرنے کا انکشاف

ریاض(این این آئی) سعودی عرب نے آرامکو تیل تنصیبات پر حملوں میں ایران کے ملوث ہونے کے شواہد پیش کردیے۔سعودی وزارت دفاع کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے ریاض میں پریس کانفرنس کے دوران تیل تنصیبات پر حملوں کے شواہد پیش کیے۔انہوں نے کہا کہ حملوں میں 18 ڈرونز اور 7 کروز میزائل جس سمت سے استعمال کیے گئے اس سے واضح ہوتا ہے کہ یہ حملے یمن سے نہیں ہوئے۔کرنل ترکی المالکی نے بتایا کہ حملوں میں استعمال ہونے والے ہتھیاروں کے ملنے کےجانچ سے یہ بات واضح ہوئی کہ یہ حملے شمال کی جانب سے کیے گئے اور googletag.pubads().definePassback('/1001388/JW_JavedCh', [1, 1]).display(); بلاشبہ اسے ایران نے اسپانسر کیا۔انہوں نے کہا کہ سعودی حکام حملے کے مقام کا درست تعین کرنے کیلئے کام کررہے ہیں اور جیسے ہی اس مقام کا تعین ہوجائے گا اس کا اعلان کردیا جائے گا۔کرنل ترکی المالکی نے پریس کانفرنس کے دوران ایرانی ساختہ ڈرون طیارے کے پر سمیت دیگر ہتھیاروں کے ملبے دکھائے۔ انہوں نے کہا کہ ڈرون کے کمپیوٹر سے حاصل ہونے والا ڈیٹا یہ ظاہر کرتا ہے کہ ڈرون ایرانی تھا۔انہوں نے کہا کہ عبقیق تیل تنصیب پر 18 ڈرون حملے کیے گئے جبکہ عبقیق اور خریص آئل تنصیبات پر مجموعی طور پر 7 کروز میزائلز داغے گئے جن میں سے 4 میزائلز خریص آئل فیلڈ پر گرے جبکہ تین عبقیق کے قریب گرے۔کرنل مالکی نے کہا کہ جن میزائلز نے ہدف کو کامیابی سے نشانہ بنایا وہ شمال کی سمت سے آئے تھے۔ خریص آئل فیلڈ پر حملے کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ جس مہارت سے کروز میزائل داغے گئے اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ یہ ایران کی پراکسی (حوثی باغیوں) کے بس کی بات نہیں۔کرنل مالکی نے کہا کہ ایران نے اپنی پراکسی کے ساتھ مل کر بہت کوشش کی کہ اسے حوثی باغیوں کا حملہ دکھا سکے لیکن اس میں ناکام رہا، یہ حملے عالمی برادری پر بھی ہیں لہٰذا اس کے ذمہ داروں کو انصاف کے کٹہرے میں لانا چاہئے۔

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں